Alphabet of vegetarians808x234

سبزی خوروں کی زبان اور خوراک

دنیا میں بہت سے لوگ ایسے بھی ہیں جو حیوانی غذا جیسے گوشت کھانے سے اجتناب کرتے ہیں۔ ایک بڑی تعداد تو ایسا مذہبی وجوہ سے کرتی ہے جیسے ہندومت کے پیروکار گوشت کھانے سے پرہیز کرتے ہیں۔ تاہم بہت بڑی تعداد میں سبزی خور ایسے بھی ہیں جو جانوروں کا گوشت اور ان کے جسم سے حاصل شدہ دیگراشیا استعمال کرنا غیر اخلاقی سمجھتے ہیں۔

یہ لوگ سبزی خوری کے اصول پر کاربند رہتے ہیں اور سبزی ترکاری اور دال بھجیا وغیرہ کھاتے ہیں۔ انہیں سبزی خور یا ویجیٹیرین کہا جاتا ہے۔ اس انداز فکر و عمل کے حامل لوگوں کے بھی کئی انداز ہیں۔ کچھ تو انڈا اور دودھ بھی استعمال نہیں کرتے لیکن اکثریت دودھ اور اس سے بنی مصنوعات استعمال کر لیتی ہے۔

جیسا کہ نام سے ظاہر ہے، سبزی خوروں کے دسترخوان پر سب سے زیادہ سبزیاں ہی کھائی جاتی ہیں جن میں آلو، بینگن اور لوکی ٹماٹر سے لے کر کھمبیوں تک سبھی شامل ہے۔ سبزیوں اور پھلوں سے بنی چیزیں جیسے سلاد، مربے، اچار، چٹنیاں، مارملیڈ وغیرہ بکثرت استعمال ہوتی ہیں۔ عام زندگی میں زیر استعمال چیزیں جو اناج یا نباتات سے بنائی جاتی ہیں جیسے پکوڑے، سموسے، کھچڑی، پلاؤ،  دہی، رائتہ، پنجابی چھولے، آلو مٹر اور جنوبی بھارت میں بہت مقبول دوسہ وغیرہ سبزی خوروں کو بھی قابل قبول ہیں۔

بہت سے کھانے جنوبی ایشیا میں سبزی خوروں اور دوسرے لوگوں میں صدیوں سے یکساں مقبول ہیں جیسے چنا مصالحہ، بیںگن کا بھرتہ، ساگ آلو، بھنڈی، گوبھی وغیرہ۔ سبزی خور اناج جیسے گندم، جو، جئی، مکئی اور چاول سے بنی غذا کثرت سے استعمال کرتے ہیں۔ اناج سے بنی اشیا جیسے دلیہ، روٹی، نان، مرمرے، پاپ کورن وغیرہ کھائے جاتے ہیں۔ آلو بھرے پراٹھے، مولی بھرے پراٹھے اور اسی طرح کئی سبزیوں سے بھر کر بنائے گئے پراٹھے مقبول ہیں۔ 

سبزی خور پاکستان، بھارت، جاپان، انڈونیشیا، روس سمیت یورپ اور امریکا میں بھی پھیلے ہوئے ہیں۔ آپ مارکیٹوں میں دستیاب غذاؤں پر ایک نشان سے سمجھ سکتے ہیں کہ یہ حیوانی اجزا سے پاک ہے اور اس کی تیاری میں خیال رکھا گیا ہے کہ کوئی ایسی چیز شامل نہ کی جائے جو سبزی خور استعمال نہیں کرتے۔ یہ نشان سیاہ حاشیے والے ایک مربع کے اندر ہرے رنگ کا ٹھوس دائرہ ہوتا ہے۔

دانے دار پھلیاں جیسے مٹر، مونگ پھلی اور سویا بین اور ان کے دانوں سے بنائی گئی غذائیں جیسے سویا ملک، ٹوفو، ان پھلیوں کے مکھن لحمیات (پروٹین) بہترین ذریعہ ہیں۔ مختلف طرح کے مغز اور گریاں اوران سے بنی چیزیں بھی استعمال کی جاتی ہیں۔ سویابین کا ریشہ اس سے ایسی خوراکیں تیار کرنے میں مددگار ہے جو چبانے سے گوشت جیسا احساس دیتے ہیں۔ گوشت ہی کی طرح کی سویا بین پروٹین کا بہترین ذریعہ بھی ہے۔

اگرچہ بعض سبزی خور شہد سے بھی اجتناب برتتے ہیں لیکن ان کی اکثریت شہد استعمال کرتی ہے۔ کافی، چاکلیٹ، مصالحہ جات، جڑی بوٹیاں قابل قبول ہیں۔ 

کھانے کے بعد میٹھے کے طور پر یا ویسے ہی مٹھائی کے طور پر سبزی خور ایسی مٹھائیاں کھاتے ہیں جن میں دودھ کا استعمال کیا گیا ہوتا ہے۔ اردو بولنے اور سمجھنے والے معاشروں میں برفی، گلاب جامن، رس گلے، چم چم، کھیر اور ربڑی اس کی مثالیں ہیں۔ اس کے علاوہ آئس کریم اور پڈنگ وغیرہ بھی شوق سے کھائی جاتی ہیں۔

See more from ​ذخیرۂ الفاظ​