testurdu

تقریر کرنا ایک بہت مشکل مگر ضروری  فن ہے- اچھا مقرر ایک کامیاب معاشرتی زندگی ہی نہیں گزارتا' بلکہ پیشہ ورانہ زندگی میں بھی کامیابیاں اس کے قدم چومتی ہیں- تقریر مختلف مواقع اور مقاصد پر کی جاتی ہے مثال کے طور پرہدایات یا معلومات دینے اور تفریح طبع کے لیے- تقریر لکھنے اور لوگوں کی موجودگی میں اس کو پیش کرنے میں سب سے اہم سامعین کے متعلق معلومات ہونا ہے کیوںکہ سامعین کو اگر بات سمجھ نا آئے تو تقریر بے اثر ہو گی- تقریر کو موثر انداز میں لکھنے میں درج ذیل نکات مدد گار ہوں گے:

 سامعین کا تعین

تقریر لکھنے سے قبل سامعین کی مکمل معلومات ہونا بہت ضروری ہےکیوںکہ وہ اپنی ضرورت اور پسند کے موضوعات میں ہی دلچسپی لیں گے- تمام سامعین علم اور تجربے کی ایک سطح پر نہیں ہو سکتے- اس لیے تقریر ھمیشہ عام سامعین کو مد نظر رکھ کر لکھی جانا چاہیے- الفاظ اور خیالات کا چناؤ سامعین کی استعداد سے میل کھاتا ہو۔

۲۔ موضوع کا احاطہ

تقریر بالعموم کسی ایک متعین کردہ موضوع پر کی جاتی ہے اور مقرر کو اپنے موضوع کے حق یا مخالفت  میں اعداد و شمار اور حقائق سامعین کے سامنے رکھنا ہوتے ہیں اور اپنے نقطہ نظر کو منطقی استدلال سے ثابت کرنا ہوتا ہے-

۳۔ مواد کی تیاری

ایک اچھی تقریر موضوع کے تعارف سے شروع ہوتی ہے- ابتدائیہ بہت بھر پور ہر متاثرکن ہونا چاہیے تاکہ سامعین کی دلچسپی بنی رہے- مواد کی تیاری میں درج ذیل باتوں کوذہن میں رکھنا چاہئے:

-۱-۔ تقریر کا خاکہ ترتیب دیں-

-۲- مواد کی ترتیب : پہلے تعارف' پھر وضاحت' اور آخر میں نتیجہ- تعارف میں موضوعاتی  مسئلہ کا احاطہ کریں اور وضاحت میں اس مسئلے کے مختلف حل پیش کریں- نتیجہ میں تمام گفتگو کا ایک خلاصہ بیان کریں-

- ۳- موضوع کو ثابت کرنے کے لیے ٹھوس حقائق اور اعداد و شمار جمع کریں-

٤- ادبی فن پاروں سے اقتباسات اور مشہور اشعار کو شامل کریں-

۵- اپنی بات کو ثابت کرنے کے لیے تاریخ کے حوالہ جات شامل کریں- عام زندگی کی مثالیں بھی بعض اوقات بہت پراثر ثابت ہو سکتی ہیں-

 ٦-  چھوٹے چھوٹے جملے استعمال کریں-

٧-  فقرے اس طرح ترتیب دیں کہ ان میں ایک واضح ربط ہو-

۹- ایک موضوع پر قائم رہیں کیوںکہ اگر آپ بہت زیادہ موضوعات ایک ہی تقریر میں یکجا کر دیں گے تو لوگوں کی دلچسپی کم ہو جائے گی-

 ۱۰- تقریر ایک مکالمے کے انداز میں لکھیں جیسے آپ لوگوں سے بات چیت کر رہے ہوں-

٤- الفاظ کا چناؤ

تقریر میں لکھے گئے الفاظ بامعنی اور عام فہم ہونا بہت ضروری ہے- مبہم' مشکل اور دہرے معنی والے الفاظ تقریر کی معنویت کم کر دیں گے اورعدم دلچسپی کا باعث ہوں گے-

۵- وقت کا لحاظ اور نظر ثانی 

تقریر مکمل لکھ لینے کے بعد ایک دفعہ اس کو بغور پڑھیں تاکہ مواد کی ترتیب، مثالوں اور اقتباسات کے استعمال' فقروں کی روانی اور الفاظ کے چنا ؤمیں اگر کوئ کمی رہ گئی ہو تو اسکی تصحیح کی جا سکے- مزید یہ کہ اگر زبان یا بیان کی کوئ غلطی رہ گئی ہو تو اس کی اصلاح کی جا سکے-

تقریر ایک مقررہ وقت میں ختم کرنا ہوتی ہے اس لیے ضروری ہے کہ آپ مواد اتنا ہی لکھیں جو مقررہ وقت میں احاطہ ہو سکے- تقریر لکھنے کے بعد کم از کم ایک مرتبہ پڑھ کر دیکھ لیں تا کہ دوران تقریر آپ کو وقت کی کمی کی وجہ سے کچھ نکات چھوڑنے نا پڑیں- 

OxfordWords بلاگ اور تبصروں میں موجود خیالات اور دوسری معلومات لازمی طور پر اوکسفرڈ یونیورسٹی پریس کے خیالات یا موقف کی ترجمانی نہیں کرتے۔

اوکسفرڈ کی زیرِ نگرانی