ورزش: جسم اور دماغ کی صحت کے لیے ضروری

صحت مند رہنے کے لیے پیسے خرچ کرنا ضروری نہیں ہے۔ جسم کو چُست رکھنے اور ذہن کی کارکردگی بڑھانے کے لیے روزمرہ زندگی میں تھوڑی سی ورزش کا وقت نکالنا بےحد ضروری ہے۔ روزانہ آدھا گھنٹہ دوڑنے سے فشار خون میں کمی آتی ہے جس سے دِل کی بیماری ہونے کا امکان کم ہوتا ہے۔ روزانہ چلنے اور آدھا گھنٹہ دوڑنے سے نہ صرف دِل صحیح طریقے سے کام کرتا ہے بلکہ اِس سے آپ كے پیروں كے پٹھے بھی مضبوط ہوتے ہیں جس سے ہڈیاں ضعیفی میں بھی نہیں ٹوٹتی اور مضبوط رہتی ہیں۔ اگر آپ کو دوڑنے كے لیے ٹریک یا کورس مل جائے تو زیادہ بہتر ہے کیونکہ اس سے آپ كے جسم کا ربط وضبط اور توازن بہتر ہوتا ہے۔ جو لوگ پہاڑوں کے اطراف روزانہ چلتے ہیں ان کا باہر اونچی نیچی سطح پر چلنے سے جسمانی توازن اور مضبوط ہو جاتا ہے۔

پہلے روزانہ چلنے سے ابتدا کیجیے۔ روزانہ چلنے سے انسان ایک گھنٹے میں تِین سو كے قریب کیلوریز گھٹا سکتا ہے۔ اگر جگہ کی کمی ہو تو آپ کمرے میں ہی ایک جگہ کھڑے رہ کر چلنے کی ورزش کر سکتے ہیں ۔ آپ یہ ورزش ٹی وی دیکھتے ہوئے بھی کر سکتے ہیں۔ ایک ہی جگہ کھڑے رہ کر چلتے ہوئے آپ بازووں کو زور زور سے آگے پیچھے چلا کر یا اوپر نیچے چلا کر اپنے ہاتھوں كے پٹھے بھی مضبوط کر سکتے ہیں۔ چلنے كے ساتھ ساتھ بازوؤں کی ورزش سے آپ كے جسم میں چُستی آتی ہے، آپ کا دِل بہتر کام کرتا ہے، آپ ہلکہ محسوس کرتے ہیں، اور آپ کا وزن بھی گھٹتا ہے۔

کیا آپ فریزبی کھیلتے ہیں؟ اپنے دوستوں كے ساتھ فریزبی کھیلنا سب سے آسان اور بہترین کھیل ہے۔ اِس سے نہ صرف آپ کُھلی ہوا میں تفریح کرتے ہیں بلکہ فریزبی پکڑنے كے لیے دوڑ کر اور مُڑ کر آسانی سے جسم کو مضبوط بھی کر سکتے ہیں۔ دوستوں كے ساتھ ایک گھنٹہ فریزبی کھیلنے سے آپ ایک گھنٹے میں پانچ سو سے زائد کیلوریز خرچ کر سکتے ہیں۔

روزمرّہ کی ورزش كے علاوہ تیراکی کرنے سے صحت پر بہت مُثبت اثر مرتب ہوتا ہے۔ تیراکی سے دِل مضبوط ہوتا ہے اور انسان دل کی بیماریوں سے محفوظ رہتا ہے۔ تیراکی میں جسم کا ہر حصہ استعمال ہوتا ہے اِس لیے جسم کا توازن بہتر ہوتا ہے۔ پانی کو چیر کر آگے بڑھنے سے گھٹنوں اور کہنیوں کو جھٹکا نہیں لگتا اور وہ مزید مضبوط ہوتے ہیں۔

اس کے علاوہ سائیکلنگ بھی عمدہ ورزش کا ذریعہ ہے۔ روزانہ 40 منٹ سائیکل چلانے سے آپ پانچ سو کیلوریز خرچ کر سکتے ہیں۔ اگر آپ كے قریب کوئی جم ہے تو وہاں روزانہ سائیکل چالانے سے تیراکی کی طرح ہڈیاں مضبوط ہوتی ہیں اور جوڑوں پر زور بھی نہیں پڑتا۔

ایک اور جاپانی ورزش جو آپ گھر بیٹھے کر سکتے ہیں جاپان کا مارشل آرٹ ہے۔  

اس میں آپ ایک ٹانگ پر کھڑے ہو کر دوسری ٹانگ سے ہوا میں سیدھی اور اونچی لات مارنے کی مشق کر سکتے ہیں۔ اس سے آپ کے پیروں کے پٹھے مضبوط ہوتے ہیں اور جسم میں لچک آتی ہے۔ ساتھ ساتھ آپ دونوں بازوؤں کا استعمال کرتے ہوئے ہوا میں گھونسے مار کر جسم کی ہر حصّے کا توازن بھی بہتر کر سکتے ہیں۔ جسم كے ایک حصے کا دوسرے حصے كے ساتھ توازن میں کام کرنا آپ کی صحت اور ذہن کی نشوونما كے لیے بہت اہم ہے اور ضعیفی میں آپ کو حاضر دماغ رہنے میں مدد دیتا ہے۔

تو کیا آپ صحت مند ہونے کے لیے ورزش کرنے تیار ہیں؟ ورزش کرنے سے پہلے یہ ضرور جان لیں کہ خالی پیٹ ورزش کرنے سے جسم کو نقصان پہنچتا ہے۔ ورزش سے ایک سے دو گھنٹہ پہلے اور ورزش کے بعد کچھ کھانا بہت ضروری ہے۔ اِس بات کا بھی خیال رہے کہ ورزش چاہے کمرے میں کریں یا باہر کھیل کر، جسم میں پانی کی مقدار کو برقرار رکھنا بہت اہم ہے ورنہ ورزش کرنے كے بعد انسان تھکاوٹ اور سر میں درد محسوس کرتا ہے۔

ایک اور بات یہ ہے کہ ورزش نہ صرف جسم بلکہ دماغ کی صحت کے لیے بھی اہم ہے۔ باقاعدہ ورزش سے بےچینی، بےخوابی، ڈیپریشن اور کئی دوسری بیماریوں سے بھی چھٹکارا مل سکتا ہے۔

آخری بات: ورزش کے ساتھ ساتھ متوازن غذا کھانا بھی ضروری ہے جس میں پھلوں، دالوں اور سبزیوں کی بڑی مقدار شامل ہونی چاہیے۔

See more from ​ثقافت و معاشرہ